جرمن حکومت کی بہن بھائی کی شادی جائز قرار دینے کی تجویز

news-1412519434-8542

برلن (نیوز ڈیسک) مغرب کی اخلاقی پستی میں روز برو اضافہ ہی ہوتا جارہا ہے اور یہ معاشرہ مادر پدر آزادی کی حقیقی مثال بن چکا ہے۔ گزشتہ دنوں جرمن حکومت کی کونسل برائے اخلاقیات نے وہ اخلاق باختہ تجویز دے دی ہے جو کسی بھی ذی شعور معاشرے کو جانوروں میں تبدیل کردے گا۔ کونسل کا کہنا ہے کہ جرمن معاشرے میں بہن اور بھائی کے (آپس میں) جنسی تعلق کو قانونی اجازت ہونی چاہیے۔ کونسل کا کہنا ہے کہ یہ ہر انسان کا بنیادی حق ہے کہ وہ کس کے ساتھ زندگی گزارنا چاہتا ہے۔ یاد رہے کہ کونسل پیٹرک سٹیوبنگ کا مقدمہ سن رہی تھی، پیٹرک نے اپنی سگی بہن سوسین کیرول سے شادی کررکھی تھی اور دونوں کے چار بچے بھی تھے۔

جرمن حکومت کی اس تجویز پر دیگر یورپی ممالک میں شدید تنقید بھی کی جارہی ہے۔

Advertisements

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s